شیطان مقدسہ مریمؔ سے کیوں عداوت رکھتاہےَ؟

اِس پوسٹ کو دوسروں کے ساتھ شیئر کریں۔

شیطان اتنی عداوت کسی اَور سے نہیں رکھتا۔ جتنی عداوت وہ مقدسہ مریمؔ سے رکھتا ہےَ۔اِس لئے مقدسہ مریمؔ نے شیطان کے سر کو کچلا ہےَ۔ شیطان دو ہزار برس سے اِیمانداروں کے دِلوں سے مقدسہ مریمؔ کی عقیدت کو ختم کرنے کی کوشش میں لگا ہُؤا ہےَ۔ کیا کبھی آپ نے غور کیا کہ کاتھولک کلیسیا سے الگ ہونے والے سب سے پہلے مقدسہ مریمؔ کی عقیدت پر حملہ آور ہوتے ہیں۔اَور مقدسہ مریمؔ کی عقیدت اَورعقائد کے بارے میں اپنے سخت  ردِ عمل کا اظہار کرتے ہیں۔

مقدسہ مریمؔ کی عقیدت کے مخالفین سب سے پہلے مقدسہ مریمؔ کے بارے میں ایسے ایسے اعتراضات اُٹھاتے ہیں ۔کہ اُن سے عقیدت مندوں کے دِلوں میں مقدسہ مریمؔ کی تعظیم کے بارے میں باطل خیالات جنم لینے لگتے ہیں۔اَور بہت سے اِیماندار ورغلائے جا کر اپنے راسخ اِیمان میں کمزور پڑجاتے ہیں۔اَور وہ جھوٹے معلموں کی باتوں کی طرف لُبھائے جاتے ہیں۔اُن کے دِلوں میں مقدسہ مریمؔ کی عقیدت ختم ہوجاتی ہےَ۔

کیا کبھی ہم نے غور کیا کہ خُدا نے مقدسہ مریمؔ کو اپنے منصوبہ ِ نجات میں کیوں شامل کیا؟ہم مختصر طور پر جاننے کی کوشش کرتے ہیں کہ شیطان مقدسہ ماں سے کیوں عداوت رکھتا ہےَ۔خُدا کا فیصلہ ہےَ کہ “میَں تیرے اَور عورت کے درمیان عداوت ڈالوں گا۔ بلکہ تیری نسل اَور عورت کی نسل کے درمیان۔ وہ تیرے سر کو کچلے گی”( تکوین 3: 18)۔عورت کی نسل سے مُراد ہمارا خُداوند یسُوؔع مسیح ہےَ جو اپنی الٰہی قدرت سے شیطان پر غالب آیا۔چونکہ عورت کی نسل (ابن مریمؔ) کے سرکو کچلے گی۔اِس لئے شیطان نہایت غصے میں ہے ( ملاحظہ ہو 12باب)۔

مکاشفہ کی کتاب میں لکھا ہےَ کہ “جب اُس اژدہا نے دیکھا کہ میَں زمین پر گرادیا گیا ہُوں۔تو اُس خاتون کو ایذا دینا لگاجس کے ہاں نرینہ فرزند ہُؤا تھا”(مُکاشفہ 12: 14)۔ یہ بھی وضاحت کردیں کہ وہ مفسرین جو مقدسہ مریمؔ کی حیثیت کو کم کرکے کہتے ہیں کہ وہ “خاتون” جس کا ذکر مکاشفہ میں ہےَ وہ کلیسیا ہےَ۔ وہ نوٹ فرمالیں کہ اژدہا زمین پر گرایا گیا۔وہ “خاتون ” کلیسیا کیسے ہوگئی جس کے ہاں نرینہ فرزند ہُؤا؟ اِس فرزند کے جوان ہونے کے بعد “کلیسیا”وجود میں آئی۔ اِس کے پیدا ہونے سے پہلے کلیسیا کا وجود نہیں تھا۔اِس لئے مُکاشفہ میں مذکورہ “خاتون” مقدسہ مریمؔ ہی ہیں۔

چونکہ مقدسہ مریمؔ شیطان کی شکست کا وسیلہ بنیں۔اِس لئے شیطان مقدسہ مریمؔ سے سخت عداوت رکھتا اَور نفرت کرتا ہےَ۔ اَور ہر طرح کا بہتان لگاتا ہےَ۔جو بھی مقدسہ ماں سے اپنی محبت ، عقیدت اَور تعظیم کا اظہار کرے گا۔ شیطان اُس سے بھی عداوت رکھے گا اَور نفرت کرے گا۔ مُکاشفہ کی کتاب جو کہ نبوت کی آخری کتا ب ہےَ۔ اِس میں لکھا ہےَ کہ ” پھر سانپ نے اپنے مُنہ سے اُس خاتون کے پیچھے ندّی کی مانند پانی بہایا تاکہ اُس کو ندّی سے بہادے۔ مگر زمین نے اپنا مُنہ کھول کر اُس خاتون کی مدد کی۔ اَور اُس ندّی کو پی لیا جو اژدہا نے اپنے مُنہ سے بہائی تھی۔ اَور اژدہا خاتون پر غصّے ہُؤا۔ اَور اُس کی باقی اولاد سے یعنی لڑنے کو گیا ۔ جو خُدا کے احکام پر عمل کرتے اَور یسُوؔع کی گواہی رکھتے ہیں”( مُکاشفہ 21: 15-17)۔

شیطان عداوت اَور نفرت کی ندّی بہائے ہوئے ہےَ۔وہ اَور اُس کے کارندے رات دِن مقدسہ مریمؔ اَور اُس سے عقیدت رکھنے والوں پر خُدا کے آگے تہمت لگاتے رہتے ہیں۔اِس لئے اگر کوئی آپ کے کاتھولک اِیمان کی مخالفت کرتا ہے َ تو پریشان نہ ہوں۔بلکہ خُوش ہوں کہ شیطان ہمارا مقابلہ کرنے کو نکلتا ہےَ۔ اَور آپ  خُدا کے احکام پر عمل کرتے ہوئے ،اپنے اِیمان اَور یسُوؔع مسیح کی گواہی  دینےپر قائم رہیں۔

اگر آپ کو یہ تحریر پسند آئی ہےَ تو اِسے زیادہ سے زیادہ دوسروں کے ساتھ شیئر کریں۔

Read Previous

امن کامجسمہ

Read Next

برکت دینا یا مخصوص کرنا بپتسمہ کا متبادل نہیں ہےَ۔

error: Content is protected !!