دو بھیڑئیے

اِس پوسٹ کو دوسروں کے ساتھ شیئر کریں۔

ایک شام دادا پوتا بیٹھے آپس میں باتیں کر رہے تھے۔ دادا اپنے پوتے کو بتارہا تھا۔کہ بیٹا ہر انسان کے اندر دو بھیڑئیے ہوتے ہیں۔جو ہر وقت آپس میں لڑتے رہتے ہیں۔ایک نیک بھیڑیا ہےَ۔ جو اچھی صفات کا مالک ہےَ۔ جس میں خوفِ خُدا، خُدا ترسی، رحم ، محبت اَور برداشت جیسے اوصاف پائے جاتے ہیں۔ دوسرا بھیڑیا خونی بھیڑیا ہےَ۔ وہ شریر بھیڑیا ہےَ۔ وہ ہر وقت دوسروں کو پھاڑ کھانے کو دوڑتا ہےَ۔ یہ تمام بُرائیوں کا پیکر ہےَ۔ پوتے نے تھوڑی دیر رُک کر سوال کیا۔ دادا جان اِن دو بھیڑیوں میں سے کونسا بھیڑیا جیتتاہےَ۔دادا جان نے بڑی سادگی سے جواب دیا۔ “بیٹا! وہی بھیڑیا جیتے گا جس کو تم پالوگے”۔

غور کریں کہ ہم کونسے بھیڑئیے کو اپنے اندر پال رہے ہیں؟

Read Previous

زندگی کا سبق

Read Next

کیا منسٹریاں خُدا کی طرف سے ہیں؟

error: Content is protected !!