سٹار فِش

اِس پوسٹ کو دوسروں کے ساتھ شیئر کریں۔

ایک دفعہ کا ذکر ہےَ کہ ایک دانشور ساحلِ سمند پر چہل قدمی کر رہا تھا۔ اُس نے تھوڑی دُور دیکھا کہ ایک چھوٹا لڑکا زمین پر جُھکتا اَور زمین پر سے کچھ اُٹھا اُٹھا کر سمند ر میں پھینک رہا تھا۔ دانشور تجسس کے مارے اُس لڑکے کے قریب گیا اَور اُس سے پوچھا کہ ” بیٹا یہ تم کیا کر رہے ہو؟ ” لڑکے نے جواب دیا” میَں سٹار فِش پانی میں پھینک رہا ہوں ۔ تھوڑی دیر پہلے سمندر کی ایک بڑی لہر آئی تھی۔ جس کے ساتھ بے شمار سٹار فِش بھی ساحل پر آگئیں۔ اَب سٹار فِش بذات ِ خود تو سمندر میں واپس نہیں جاسکتیں۔ خدشہ ہےَ کہ کہیں یہ پانی کے بغیر مرنہ جائیں۔ میَں اِن کو بچانے کی کوشش کر رہا ہوں ۔ اَور ریت سے اُٹھا کر سمندر میں پھینک رہا ہوں”۔ دانشور نےحیران ہو کر کہا” یہ تو بے شمار ہیں۔ تم کس کس کو بچاؤ گے؟” لڑکا زمین پر جھکا اُس نے ایک اَور سٹار فِش اُٹھائی اَور سمندر میں پھینک دی۔ اَور پھر دانشور سے کہا” اگرچہ میَں تمام سٹار فِش کو تو نہیں بچاسکتا۔کم از کم میرے اِس اقدام سے ایک کو تو زندگی ملی ہےَ”۔

دنیا ایک سمندر ہےَ۔ خُدا نے ہمیں زندگی اَور زندگی کے تمام لوازمات کے ساتھ پیدا کیا ہےَ۔ گُمراہی اَور جھوٹی تعلیم کی لہریں ہمیں ایمانی زندگی سے باہر دھکیل دیتی ہیں۔ ہم سٹار فِش کی طرح ایمانی زندگی کی طرف لوٹنا چاہتے ہیں۔ مگر اپنی کوششوں سے واپس نہیں جا سکتے۔ ہمیں مذکورہ بالا لڑکے کی طرح کسی کی مدد کی ضرورت ہوتی ہےَ۔ خُدا ہمیں ایک موقعہ فراہم کرتا ہےَ۔ شاید اِس لڑکے کی طرح ہم پوری دُنیا کی نجات کا وسیلہ تو نہ بن سکیں۔ مگر کم از کم ہم کچھ لوگوں تک خُداوند یسوؔع مسیح کا پیغام پہنچانے کا وسیلہ تو بن سکتے ہیں۔ ہمارے اِس چھوٹے سے عمل سے کسی ایک کے لئے زندگی کا پیغام بن سکتا ہے َ۔ آپ تاکستان ویب سائٹ پر اِیمان افروز تحریریں پڑھتے ہیں ۔ اِن کو دوسروں تک پہنچانا آپ کا بھی فرض ہے َ۔ اِس لئے جو کچھ پڑھیں ۔ اِسے شئیر کریں۔ اِس کے متعلق اپنے دوستوں اَور عزیزوں کو بھی بتائیں۔ خُداوند آپ کو برکت دے۔ آمین۔

Read Previous

عام ایام کے دوران سترھواں اتوار

Read Next

انجیل ِمقدس برائے 27 جولائی 2020

error: Content is protected !!