اقدس روزری کی دُعا ایٹم بم سے طاقتور ہےَ۔

اِس پوسٹ کو دوسروں کے ساتھ شیئر کریں۔

6 اَور 9 اگست کو  دوسری جنگِ عظیم کے دَوران جاپان کے دو شہروں  ہیروشیماؔ اَور ناگاسکی ؔپر  ایٹم بم گرائے گئے  تھے جس کے بعد جنگ عظیم ختم ہوگئی تھی ۔جیزوٹ فادر ہبرٹ شِفرؔ اَور اُس کے تین ساتھی فادر اِس ایٹمی دھماکے سے زندہ بچ گئے تھے۔کیونکہ وہ روزری پڑھ رہے تھے۔

 پہلاایٹم بم ہیروشیماؔ پر جیزوٹ چرچ آور لیڈی آف اسمپشن  سے صرف آٹھ بلاک دُورپھٹا تھا۔فادر ہبرٹ شِفر ؔ اِس تاریخی واقعہ کے چشم دید گواہ تھے ۔ اُن کا کہنا ہے َ کہ” اچانک ایک  زوردارخوفناک دھماکہ ہُؤا۔ جس نے  گرج دار آواز سے فضا کو بھر دیا۔ کسی نادیدنی قوت نے مجھے کُرسی سے اُٹھایا۔ہَوا میں اُچھالا۔مجھے  خُوب جھنجوڑااَور پھرمجھے ایک پتے کی طرح موسم ِ خزاں کے  بگولے کی لپیٹ میں لے کر چکردیا”۔

 جس روز ہیرو شیماؔ پر ایٹم بم گرایا گیا۔ اُس روزچاروں کاہن ایٹم بم کے دھماکے  کی تباہی والے علاقے میں رہ رہے تھے ۔ دھماکہ ہونے کے بعد اُنہوں نے اِدھر اُدھر دیکھنے کی کوشش کی ۔ اُنہیں کچھ دکھائی نہیں دیا۔ میلوں تک ہر سمت ہزاروں افراد کی لاشیں بکھری پڑی تھیں ۔ صرف یہ چار کاہن اَور اُن کا گھر محفوظ رہاتھا۔ اگرچہ وہ زخمی ہوئے۔ مگر زندہ بچ گئے۔ اِس کے بعد اِن میں تابکاری کے اثرات بھی نہ پائے گئے۔

تصویر میں ہیروشیماؔ پر ایٹم گرنے کے بعد چاروں فادر چرچ کے باہر کھڑےہیں۔

فادر شِفر بیان کرتے ہیں کہ صرف ایک سیکنڈلگا۔ نہایت خوفناک روشنی چمکی۔ہیروشیماؔ جو پانچ لاکھ نفوس کی آبادی والا شہر تھا۔ ملیا میٹ ہوگیا۔ ہر طرف اندھیرا، خون ، ہر چیز جلی ہوئی، آہ و بکااَور وحشت کا سماں تھا۔ جب فادر ہبرٹ شِفرؔ اَور اُن کےساتھیوں سے پوچھا گیا کہ ایٹم بم کے نتیجہ میں ہزاروں لوگ لقمہ ِ اجل بن گئے اَور جو  زندہ بچ گئے وہ تابکاری کا شکار ہوگئے۔ آخر کونسی ایسی  بات تھی جس کی وجہ سے وہ آپ محفوظ رہے۔ فادر شِفرؔ اَور اُس کے ساتھی فادروں کا کہنا تھا کہ “ہم اِس لئے بچ گئے کہ ہم فاطمہ ؔکے پیغام پر عمل کر تے ہوئےاپنے اُس  گھر میں رہتے ہوئے روزانہ اقدس روزری پڑھا کرتے تھے “۔

یاد رہے کی پہلی جنگ ِ عظیم کے دَوران مقدسہ مریم ؔ فاطمہ کے مقام پر تین بچوں پر ظاہر ہوئی تھیں ۔ اَور اپنے پیغام میں پیشنگوئی کی تھی کہ جنگ ِ عظیم   اؤّل جلد ختم ہونے والی ہےَ۔ لیکن اِس کے ساتھ ہی خبردار کیا تھا کہ اگر انسانوں نے دُعا اَور توبہ کی طرف توجہ نہ دی۔ تو اِس سے بھی بڑی جنگ ہونے والی ہے َ۔

ہیروشیماؔ کے تجربے سے ثابت ہوتا ہے َ کہ اقدس روزری ایٹم بم سے زیادہ طاقتور ہےَ۔ یہ شیطان اَور اُس کے لشکر کو تباہ کردیتی ہےَ۔ جہاں افراد مل کر روزری پڑھ پڑھتے ہوں۔ وہاں شیطان کا زور نہیں چلتا۔ اَور وہ  وہاں سے راہ ِ فرار اختیار کر جاتا ہےَ۔ اپنی زندگی میں ہر روز روزری پڑھیں ۔پھر آپ دیکھیں گے کہ آپ کی زندگی کس طرح تبدیل ہوتی ہےَ۔ اَور آپ کا اِیمان مستحکم ہوتا ہےَ۔

کوئی مسئلہ یا  کوئی مُشکل ایسی نہیں جو اقدس روزری کے پڑھنے کے وسیلہ سے حل نہ ہوسکتی ہو۔   کلام مقدس میں بھی لکھا ہے َ کہ ” جو کچھ تُم دُعا میں مانگتے ہو ۔  یقین رکھو کہ تُم نے پالیاہے َ تو تُم اُسے پاؤ گے “( مقدس مرقس 11: 24) ۔”جو کچھ تُم اِیمان کے ساتھ دُعا میں مانگو گے ۔ وہ سب تمہیں ملے گا” ( مقدس متی 21: 22)۔ ایسی دُعا اَور اِیمان میں طاقت ہے َ۔ جس میں شک شامل نہ ہو۔ اِس لئے اِیمان لانے والوں کے لئے سب کچھ ممکن ہے َ۔

کل کی پوسٹ میں بیان کیا جائے گا کہ اقدس روزری اَور اِس کا مقصد کیا ہےَ۔ اَور اقدس روزری کس طرح پڑھی جاتی ہےَ۔

Read Previous

لبنانؔ کے لئے پوپ فرانسسؔ کی دُعا

Read Next

انجیلِ مقدس برائے 7 اگست 2020

error: Content is protected !!